شوگر:کلوننگ کیا چیز ہے؟

ڈاکٹر عبدالسلام:مجھے اس کے بارے میں کوئی زیادہ علم نہیں ہے،سیلز، جینز، کروموسومز ان کو ہی ملٹی پلیکیشن کرتے ہیں اور انسان بنا لیتے ہیں ، آپ دیکھیں کہ اس ایک سیل کے اندر سارا جسم موجود ہے، اس کے اندر ہر کریکٹر موجود ہے ، اسے کروموسومز اور یہ جینز ہی کنٹرول کرتے ہیں ۔

شوگر:سائنس دان بیٹاسیلزتیار کرنے کی کوشش کر رہے ہیں ۔

ڈاکٹر عبدالسلام:بیٹا سیلز لبلبے سے ہی لیں اور اس کو کلچر کریں گے اس کے بعد وہ ایک کلچر بن جائے گی یعنی کہ بیٹا سیلز کی ایک فیکٹری بن جائے گی وہ جسم کے اندر انپلانٹ کر دیں گے اور وہ کام کرنا شروع کر دے گی اور وہ نقصان بھی نہیں دے گا کیونکہ وہ اسی ہومن باڈی سے لیا گیا ہے یعنی کہ ٹشو میچنگ ہے۔

شوگر:بائیو کیمسٹری اور ڈپریشن کے بارے میں بتائیں؟

ڈاکٹر عبدالسلام:ڈپریشن میں ہارمون کمزور ہوتے ہیں اور اس سے کافی تبدیلیاں آتی ہیں ۔ میں یہاں آپ کو بتاتا چلتا ہوں کہ ہماری باڈی میں دو سسٹم ہیں ایک انگزائم سسٹم ہے ایک اینڈوکرائن سسٹم ہے اگر ان کا کنٹرول ہمارے ہاتھ میں آ جائے تو انسان کو ہم بچپن میں بھی رکھ سکتے ہیں، جوانی میں بھی رکھ سکتے ہیں، بڑھاپے میں بھی رکھ سکتے ہیں، انہی کی ایکٹیویٹیز سے ہم بوڑھے ہوتے ہیں ، جوان ہوتے ہیں اور مر جاتے ہیں ۔ یہی جینز ہیں جو بڑھاپا لاتی ہیں ۔

شوگر: اچھے خوشگوار موڈ اور برے موڈ پر بھی اس کا اثر ہوتا ہے؟
ڈاکٹر عبدالسلام:برا موڈ تو ایک عجیب کنڈیشن ہے ، اداسی میں ہو ہارمون کام کرتے ہیں وہ پیٹیکولامینز ہیں ان کا اپنا فنکشن ہے خوف میں یہی ہارمون نکلتے ہیں لڑنے میں یہی ہارمون نکلتے ہیں اور باڈی کو الرٹ کرتے ہیں ۔ جب انسان دیکھتا ہے کہ خطرہ زیادہ ہے اور ہارمون نکلتے ہیں اگر مقابلہ کر سکتاہے تو کرے گا ورنہ لوز ہو جائے گا،یہی ہارمون کا کام ہوتا ہے۔ انہی پر ایکٹیویٹیز ڈیپنڈ کرتی ہیں انگزائم کی ایکٹیویٹیز تیز ہو جائے گی ، میٹا بولزم انکریز کر جائے گا ،اس لیے ڈپریشن کی کنڈیشن تو بڑی عجیب قسم کی ہے۔

شوگر:جسم میں جو بڑے ہارمونز ہیں وہ کون کون سے ہیں؟

ڈاکٹر عبدالسلام:جسم میں ہارمونز تو بہت زیادہ ہیں، دیکھیں ٹیسٹسرون ہیں گروتھ ہارمونز ہیں تھراسین ہیں کارٹکسول ہے یہ سب بڑے بڑے ہارمونز ہیں۔

شوگر:ہارمونز کوٹریٹ کیا جا سکتا ہے کہ ایسا ٹریٹمنٹ ہے کہ ہارمونز کو ڈائریکٹر ٹریٹ کیا جا سکے؟ کچھ پراڈکٹ ایسی آئی ہیں باہر سے امپورٹ ہو کر جو ہارمونز تھراپیز کے طور پر استعمال کرتے ہیں جیسے مینسٹرل پرابلم ہو رہا ہے یا پریگنینسی نہیں ہو رہی ؟

ڈاکٹر عبدالسلام:ہارمونز تھراپی مجھے دے دیں میں کر دوں گا لیکن وہ بہت خطرناک ہے۔ آپ نے دیکھا ہوگا کہ اگر کلونٹ دیتے ہیں پریگنینسی کے لیے تو ٹوینز ہوتے ہیں ، چار بے بیز ہو جاتے ہیں وہ ایولیوشن کو انکریز کرتے ہیں اس لیے میرا خیال ہے نہیں دینی چاہئیے۔ ہاں اگر کسی میں ہارمونز کی کمی ہے اس کو دیں لیکن ہے خطرناک۔ کیونکہ اللہ تعالیٰ نے ہارمونز کا بیلنس ایسا رکھا ہوا ہے کہ اگر ایک ہارمون بڑھتا ہے تو دوسرا ہارمون اس کی وجہ سے پھٹ جاتا ہے۔ اب انسولین گھٹے گی تو گلوکوگان بڑھ جائے گا، یہ سارے کاربوہائیڈریٹس کو توڑے گا، پروٹین کو توڑے گا، فیٹس کو توڑے گا اور گلوکوز لے کر آئے گا۔

شوگر:فیملی کا تعارف کرواناپسند کریں؟

ڈاکٹر عبدالسلام:میرا ایک ہی بیٹا ہے، اس نے حال ہی میں ایم بی بی ایس کیا ہے۔ اب آگے دیکھیں کیا کرتا ہے۔ میری دو بیٹیاں ہیں دونوں نے ایم اے کیا ہوا ہے اور شادیاں بھی ہو چکی ہیں، وائف نے ایم اے انگلش کیا ہوا ہے۔

شوگر:آپ کی فیملی میں کسی کو ذیابیطس ہے؟

ڈاکٹر عبدالسلام:میری وائف کو ذیابیطس ہے چونکہ ان کے والدین کو ذیابیطس تھی اس لیے ان کو تو وراثت میں ملی ہے۔

Page:  | 2 | 3 | 4 | 5 | 6 | 7 | 8