ذیابیطس میں آپ تنہا نہیں!
باب

تیسرا راز: تنبیہہ

3

’’کبھی کبھی، مگر انہیں اکثر ایسا نہیں کرنا پڑتا کیونکہ یہ ’’نیک کام‘‘ میں خود ہی کر گزرتی ہوں‘‘ بلقیس بیگم نے جواب دیا۔

جاوید مسکرایا، بلقیس بیگم کی حس مزاح اسے اچھی لگی۔

’’اگر کبھی تعریف کو دل چاہے تو میں ڈاکٹر خرم کو تعریف کیلئے خود ہی کہہ دیتی ہوں۔‘‘

’’لیکن ایسا کرتے ہوئے آپ کے اعصاب کیسے ساتھ دیتے ہیں؟‘‘ جاوید نے پوچھا۔

’’یہ بہت آسان ہے، یہ بالکل ایک شرط کی طرح ہے، اگر وہ تعریف کرتے ہیں تو میں جیت جاتی ہوں۔‘‘

’’مگر جب وہ ایسا نہیں کرتے تو؟‘‘ جاوید نے قطع کلامی کرتے ہوئے کہا۔

’’تب میں صرف برابر رہتی ہوں‘‘ بلقیس بیگم نے جواب دیا۔

جاوید بولا’’اگر آپ سے کوئی غلطی ہو جائے تو وہ کیا کرتے ہیں؟‘‘

’’اگر میں کوئی سنگین غلطی کرتی ہوں، تب وہ مجھے ’’تنبیہہ‘‘ کرتے ہیں۔‘‘

’’ کیا؟‘‘ نوجوان نے چونکتے ہوئے پوچھا۔

Comments

comments